SAIFI MEDIA

یہ ویب سائٹ ان لوگوں کے لئے بنائی گئی ہے جو تصوف اور اس تک مکمل رسائی کے بارے میں جاننا چاہتے ہیں۔ یہاں آپ کو اولیا اکرام کی تاریخ مل سکتی ہے۔ خصوصاً سلسلہ سیفیہ اور ان کی تعلیمات یہاں موجود ہیں۔ آپ کسی بھی سوال کے لئے پوچھ سکتے ہیں۔ شکریہ

یہ ویب سائٹ ان لوگوں کے لئے بنائی گئی ہے جو تصوف اور اس تک مکمل رسائی کے بارے میں جاننا چاہتے ہیں۔ یہاں آپ کو اولیا اکرام کی تاریخ مل سکتی ہے۔ خصوصاً سلسلہ سیفیہ اور ان کی تعلیمات یہاں موجود ہیں۔ آپ کسی بھی سوال کے لئے پوچھ سکتے ہیں۔ شکریہ

تازہ ترین

اسباقِ سلسیلہ نقشبندیہ سیفیہ



لطیفہ قلب

مقام

لطیفہ قلب کا مقام بائیں پستان سے دو انگل نیچے ہے ۔

ذکر

یہ عالم امر کا پہلا سبق ہے اس سبق میں ذکر کرنے کاطریقہ یہ ہے لطیفہ قلب کے مقام پر توجہ رکھ کر کلمہ ” اللہ” کا ورد کرنا ہے۔ مگر زبان سے نہیں صرف خیال سے یعنی دل میں اللہ اللہ اللہ اللہ کرتے رہنا ہے یکسوئی کے ساتھ۔ ۔ جب تک مرشد مبارک یہ سبق نہ عطا کریں اور بندہ خود سے اس سے فیض حاصل کرنا چاہے تو کچھ بھی حاصل نہ ہو گا۔ پہلے سلسلہ عالیہ سیفیہ شریف میں کسی بھی خلیفہ صاحب کے ہاتھ پہ بعیت کرے پھر اس کے لیے تصوف کا راستہ کھلے گا اور وہ ان اسباق مبارکہ سے فیوض و براکات حاصل کر سکے گا۔



تاثیر

ماسوا   اللہ تعالیٰ کی نسیان اور ذات حق کے ساتھ محویت

اس کی تاثیر ہے لطیفہ کا حرکت کرنا  دفع غفلت اور دفع شہوت ہے۔

لطیفہ روح

مقام

لطیفہ روح کا مقام دائیں پستان سے دو انگل نیچے ہے۔

ذکر کرنے کا طریقہ

یہ عالم امر کا دوسرا سبق ہے اس سبق میں ذکر کرنے کاطریقہ یہ ہے لطیفہ روح کے مقام پر توجہ رکھ کر کلمہ ” اللہ” کا ورد کرنا ہے۔ مگر زبان سے نہیں کرنا صرف خیال سے یعنی دل میں اللہ اللہ اللہ اللہ کرتے رہنا ہے یکسوئی کے ساتھ۔ ۔ جب تک مرشد مبارک یہ سبق نہ عطا کریں اور بندہ خود سے اس سے فیض حاصل کرنا چاہے تو کچھ بھی حاصل نہ ہو گا۔ پہلے سلسلہ عالیہ سیفیہ شریف میں کسی بھی خلیفہ صاحب کے ہاتھ پہ بعیت کرے پھر اس کے لیے تصوف کا راستہ کھلے گا اور وہ ان اسباق مبارکہ سے فیوض و براکات حاصل کر سکے گا۔



تاثیر

لطیفہ روح پر اسم ذات ( اللہ) کی تجلی اور صفات کا ظہور ہے۔ اس کا حرکت کرنا غصہ و غضب کی کیفیت میں اعتدال اور طبیعت میں اصلاح و سکون پیدا کرتا ہے 

لطیفہ سر

مقام

لطیفہ سر کا مقام بائیں پستان سے دو اُنگل اوپر ہے۔

ذکر کرنے کا طریقہ

یہ عالم امر کا تیسرا سبق ہے اس سبق میں ذکر کرنے کاطریقہ یہ ہے سالک لطیفہ سر کے مقام پر توجہ رکھ کر کلمہ ” اللہ” کا ورد کرے۔ مگر زبان سے نہیں کرنا صرف خیال سے یعنی دل میں اللہ اللہ اللہ اللہ کرتے رہنا ہے یکسوئی کے ساتھ۔ ۔ جب تک مرشد مبارک یہ سبق نہ عطا کریں اور بندہ خود سے اس سے فیض حاصل کرنا چاہے تو کچھ بھی حاصل نہ ہو گا۔ پہلے سلسلہ عالیہ سیفیہ شریف میں کسی بھی خلیفہ صاحب کے ہاتھ پہ بعیت کرے پھر اس کے لیے تصوف کا راستہ کھلے گا اور وہ ان اسباق مبارکہ سے فیوض و براکات حاصل کر سکے گا۔



تاثیر

لطیفہ سر پر اللہ تعالیٰ کی صفات کے شیونات و اعتبارات کا ظہور اور لطیفہ سر کا حرکت کرنا ہے۔  یاد رہے یہ مشاہدہ اور دیدار کا مقام ہے۔ اس کی تاثیر تمام حرص کے خاتمے ،  دینی امور کے معاملے میں بلا  تکلف مال خرچ کرنے اور فکر آخرت کی بیداری ہے ۔

لطیفہ خفی

مقام

لطیفہ خفی کا مقام دائیں پستان سے دو انگل اوپر ہے۔

ذکر کرنے کا طریقہ

یہ عالم امر کا چوتھا سبق ہے اس سبق میں ذکر کرنے کاطریقہ یہ ہے سالک لطیفہ خفی کے مقام پر توجہ رکھ کر کلمہ ” اللہ” کا ورد کرے۔ مگر زبان سے نہیں کرنا صرف خیال سے یعنی دل میں اللہ اللہ اللہ اللہ کرتے رہنا ہے یکسوئی کے ساتھ۔ ۔ جب تک مرشد مبارک یہ سبق نہ عطا کریں اور بندہ خود سے اس سے فیض حاصل کرنا چاہے تو کچھ بھی حاصل نہ ہو گا۔ پہلے سلسلہ عالیہ سیفیہ شریف میں کسی بھی خلیفہ صاحب کے ہاتھ پہ بعیت کرے پھر اس کے لیے تصوف کا راستہ کھلے گا اور وہ ان اسباق مبارکہ سے فیوض و براکات حاصل کر سکے گا۔




تاثیر

 صفات سلبیہ تنزیہیہ کا ظہور اور لطیفہ کا حرکت کرنا ( یعنی جاری ہو جانا اور عجیب و غریب احوال کا ظہور )

اس کی تاثیر حسد، بخل ، کینہ اور غیبت جیسی امراض سے نجات حاصل ہو جانا ہے ۔

لطیفہ اخفیٰ 

مقام

لطیفہ اخفیٰ کا مقام سینے کے بالکل وسط میں ہے سر اور خفی کے درمیان۔

ذکر کرنے کا طریقہ

یہ عالم امر کا پانچواں سبق ہے اس سبق میں ذکر کرنے کاطریقہ یہ ہے سالک لطیفہ اخفیٰ کے مقام پر توجہ رکھ کر کلمہ ” اللہ” کا ورد کرے۔ مگر زبان سے نہیں کرنا صرف خیال سے یعنی دل میں اللہ اللہ اللہ اللہ کرتے رہنا ہے یکسوئی کے ساتھ۔ ۔ جب تک مرشد مبارک یہ سبق نہ عطا کریں اور بندہ خود سے اس سے فیض حاصل کرنا چاہے تو کچھ بھی حاصل نہ ہو گا۔ پہلے سلسلہ عالیہ سیفیہ شریف میں کسی بھی خلیفہ صاحب کے ہاتھ پہ بعیت کرے پھر اس کے لیے تصوف کا راستہ کھلے گا اور وہ ان اسباق مبارکہ سے فیوض و براکات حاصل کر سکے گا۔



تاثیر

مرتبہ تنزیہیہ  اور مرتبہ احدیت مجردہ کے درمیان ایک برزخی مرتبے کے ظہور  و شہود سے وابستہ ہے اور یہ  ولایت محمدیہ ﷺ کا مقام ہے اس کی علامت بلا تکلف ذکر جاری ہونا اور قرب ذات  کا احساس و شہود ہے اس کی تاثیر تکبر ، فخر و غرور اور خود پسندی جیسی مہلک روحانی امراض سے آزادی پانا اور حضور و اطمینان کے اصول سے ظہور پذیر ہوتی ہے

لطیفہ نفسی

مقام

لطیفہ نفسی کا مقام ماتھے کے درمیان اوپر والا حصہ جہاں سے عادتاََ بال شروع ہوتے ہیں۔

ذکر کرنے کا طریقہ

یہ عالم خلق کا پہلا سبق ہے اس سبق میں ذکر کرنے کاطریقہ یہ ہے سالک لطیفہ نفسی کے مقام پر توجہ رکھ کر کلمہ ” اللہ” کا ورد کرے۔ مگر زبان سے نہیں کرنا صرف خیال سے یعنی دل میں اللہ اللہ اللہ اللہ کرتے رہنا ہے یکسوئی کے ساتھ۔ ۔ جب تک مرشد مبارک یہ سبق نہ عطا کریں اور بندہ خود سے اس سے فیض حاصل کرنا چاہے تو کچھ بھی حاصل نہ ہو گا۔ پہلے سلسلہ عالیہ سیفیہ شریف میں کسی بھی خلیفہ صاحب کے ہاتھ پہ بعیت کرے پھر اس کے لیے تصوف کا راستہ کھلے گا اور وہ ان اسباق مبارکہ سے فیوض و براکات حاصل کر سکے گا۔





تاثیر

یہ عالم خلق کا پہلا سبق ( لطیفہ) ہے اور اس کی تاثیر نفسانیت اور سرکشی کے مِٹ جانے، عجز و انکساری کا مادہ پیدا ہونے اور ذکر میں ذوق و شوق بڑھ جانا ہے ۔

لطیفہ قالبی

مقام

اس لطیفہ قالبی کا مقام عین دماغ کے وسط میں ہے۔

ذکر کرنے کا طریقہ

یہ عالم خلق کا دوسرا سبق ہے اس سبق میں ذکر کرنے کاطریقہ یہ ہے سالک لطیفہ قالبی کے مقام پر توجہ رکھ کر کلمہ ” اللہ” کا ورد کرے۔ مگر زبان سے نہیں کرنا صرف خیال سے یعنی دل میں اللہ اللہ اللہ اللہ کرتے رہنا ہے یکسوئی کے ساتھ۔ ۔ جب تک مرشد مبارک یہ سبق نہ عطا کریں اور بندہ خود سے اس سے فیض حاصل کرنا چاہے تو کچھ بھی حاصل نہ ہو گا۔ پہلے سلسلہ عالیہ سیفیہ شریف میں کسی بھی خلیفہ صاحب کے ہاتھ پہ بعیت کرے پھر اس کے لیے تصوف کا راستہ کھلے گا اور وہ ان اسباق مبارکہ سے فیوض و براکات حاصل کر سکے گا۔

تاثیر

یہ عالم خلق کا دوسرا  سبق  ( لطیفہ) ہے لیکن در  حقیقت  یہ لطائف اربعہ ہوا،پانی، آگ اور مٹی پر مشتمل ہے۔ اس کی تاثیر تمام بدن یعنی بال بال میں ظاہر ہوتی ہے۔ رذائل بشریہ اور علائق دینویہ سے مکمل رہائی پا لینے سے ظاہر ہوتی ہے ۔ یاد رہے کہ یہ کیفیت فناء لطائف حاصل ہونے کے بعد ہوتی ہے

No comments:

Post a Comment